نعت جب جب سنائے گی دنیا

نعت جب جب سنائے گی دنیا
یاد میری دلائے گی دنیا
ڈھونڈنے مجھ کو جائے گی دنیا
کھو کے مجھ کو نہ پائے گی دنیا
مجھ سے منسوب کر کے باتوں کو
بات اپنی بنائے گی دنیا
داستانوں سے میری چن چن کر
اپنے قصے بنائے گی دنیا
میں غلامی ء مصطفی میں ہوں
مجھ کو کیا آزمائے گی دنیا
پہنچ ہی جائے گی دیار نبی
میری خوشبو جو پائے گی دنیا
روٹھ جائے گا ایک دن جو ادیؔب
بول! کیسے منائے گی دنیا