قَادرا ،سَرورا، رَاہنما، دستگیر
غوثِ اعظم، امامِ مُبیں، بے نظیر

تیرے زیرِ قدم اولیاء ،اصفیاء
سَرورِ سَروراں ،پیرِ روشن ضمیر

ذکر سے تیرے ٹل جائیں سب مشکلیں
نام سے تیرے پائیں رہائی اسیر

تو جِسے چاہے دے، جس قدر چاہے دے
تیری بخشش نرالی عطا بے نظیر

تو ہے آئینہ سیرتِ مصطفٰے
تو علیم وخبیر و بشیر و نذیر

یہ وظیفہ ہے ہر غم کا دَرماں وؔقار
غوثِ اعظم مدد! المدد دستگیر !

شاعر :وقار الملت مفتی وقار الدین معین

Comments are off for this post