کیسے کاٹوں رَتیاں صابر

کیسے کاٹوں رَتیاں صابر

تارے ِگنت ہوں سیاں صابر

مورے کرجوا ہوک اُٹھت ہے

مو کو لگالے چھتیاں صابر

توری صورتیا پیاری پیاری

اچھی اچھی بتیاں صابر

چیری کو اپنے چرنوں لگالے

میں پروں تورے پیاں صابر

ڈولے نیا موری بھنور میں

بلما پکڑے بیاں صابر